محبت کے رنگ

آج سورج چڑھنے کے بعد کا منظر دیکھا۔ ایسے جیسے پہلے کبھی نہیں دیکھا ہو۔چند لمحے تو میں ادھر ہی کھڑی کی کھڑی ہی رہ گئی۔ خود کو ہلانے کی کوشش کی،ہوش میں آنے کی کوشش کی مگر اتنی خوبصورت مصوری دیکھ کر بھلا کس کے ہوش ٹھکانے رہ سکتے تھے۔

ہفتے کے بعد بارش رکی تھی آج مگر ایک جانب گھنے بادلوں کی فوج ابھی بھی سر بستہ کھڑی تھی اور دوسری جانب آسمان نیلا صاف شفاف تھا۔اور ان دونوں کو ملا کر قدرت نے جو حسین شہکار تیار کیے تھے وہ انسان کو ورطہ حیرت میں ڈال دینے کے لیے کافی تھے۔

میرا رخ مشرق کی طرف تھا اور سورج طلوع ہوئے تقریباً پندرہ منٹ کا عرصہ ہو چکا تھا۔یہاں آسمان پر میرے سر کے عین نیچے گھنے بالوں کی ایک چادر تنی تھی جومشرق سے آنے والے سبز پہاڑیوں کے اوپر سے ہوتی ہوئی شمال تک جا رہی تھی اور سورج کی شعاعیں اس میں کسی مجذوب کی طرح کھو کر اس گہرے سرمئی رنگ کو گہرے ارغوانی اور پھر بنقشی اور پھر جامنی میں تبدیل کر رہی تھیں۔ پھر جب مشرق کی طرف رخ کیا تو جہاں سے سورج طلوع ہو رہا تھا وہاں دور افق پر جیسے کوئی آلائو جلائے بیٹھا تھا۔کالے کوئلوں سے بھری انگیٹھی میں کہیں کہیں آگ کی تپش سے کوئلے جل کر لال، مالٹائی، کاپر اور پھر تیز نارنجی ہو رہے تھے۔

لیکن مغرب اور جنوب کی جانب کوئی اور ہی دنیا آباد تھی۔یہ وہ جگہ تھی آسمان صاف تھا اور بادل بھی ہاری ہوئی فوج کی طرح اپنا اثر و رخ کھو بیٹھے تھے۔یہاں کالے اور تیز رنگ کی نسبت مصور نے ہلکے رنگ استعمال کیے تھے یا پھر برش کو ہلکا چھوڑ دیا تھا۔یہاں ہلکی ہلکی سفیدی چھائی تھی اور سورج کی کرنیں بھی ہلکے کریم بارڈر کے ساتھ ہلکی ہلکی نارنجی، دھیما سا کاپر، ہلکا مالٹائی اور دور جاتے جاتے تو گلابی اور پھر ہلکا میٹھا سفید بھی ہوتی جا رہی تھیں۔یہ سب رنگ دیکھ کر کسی محبت بھرے رشتے کا خیال آتا تھا۔وہ جس کو آپ نے چاہا ہو جب وہ آپ سے بات کرتا ہے تو ایسے ہی رنگ آپ کے چہرے پر کھلنے لگتے ہیں۔اور جب وہ آپ کو اپنا کہتا ہے تو شرم اور فرطِ محبت سے لبریز ہو کر آپ بھی کبھی لال،کبھی کریم،کبھی بنقشی اور کبھی ارغوانی ہونے لگتے ہیں۔ اور جب اس کے خیال سے دل و دماغ کی جنگ چھڑتی ہے تو وہاں بھی ایک طرف تیز اور ایک طرف ہلکا سا رنگ بکھر جاتا ہے بالکل  آسمان پر قدرت اس فنکاری کی طرح۔۔۔۔۔

Advertisements

5 thoughts on “محبت کے رنگ

  1. Mohbbat kay rang…

    Sabhee sitaaray…
    Daryaaoun kay saaray moti….
    Saawan ki pehli barish kay saaray qatray….
    Ujlay chaand ki saari kirnein…
    Saaray mosam sabhee duaein…
    Phoolon ki rangeen qabaaein…
    Pattee pattee parrnay waali bheeni shabnam…
    Ism-e Azam……

    Liked by 1 person

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s