:) غریبی میں آٹا گیلا

ارے بھائی یہ کفن کہاں سے ملتا ہے۔۔۔ہم نے بازار پہنچتے ہی پہلی دوکان والے سے پوچھا

باجی یہ ساتھ والی گلی مڑیں توڈھول باجے کی دوکان کے ساتھ والی دوکان ہے

پٹھان دوکان دار نے رستہ بتاتے ہوئے اشارہ کیا

  ہم اس کی ہدایات کو فالو کرتے کرتے چلنے لگے اور ڈھول والے کی دوکان کے پاس جا رکے

آج تنخواہ ہاتھ میں تھی تو اپنی دیرینہ خواہش پوری کرنا چاہتے تھے۔دنیا کی مستی میں اب جی نہیں لگتا تھا تو تھوڑا خود کو سنوارنے کی خواہش میں بازار جا پہنچے تھے۔

ارے بھیا، کفن ملے گا؟ ہم نے ادھر ادھر دیکھتے کہا

دوکان والے بھائی نے پہلے تو غور سے ہمیں دیکھا پھر ہمارے آنکھوں کو نوٹ کرنے کی کوشش کی کہ جیسے دیکھنا چاہ رہا ہو کہ کہیں ہم رو تو نہیں رہے پھر خواہ مخواہ منہ سا بنا کے بولا جی باجی،ملے گا۔۔کون سا چاہئے تیار کہ ان سلا؟

اماں ہمیں کیا معلوم تیار اور ان سلے میں کیا فرق ہوتا ہے۔خیر ایسا کرو سلا دے دو۔ ہم نے دونوں بازو کوٹ کی جیب میں دبائے،کاندھے اچکاتے ہوئے کہا

شبیر بھائی۔۔۔۔یہ باجی کو سلا کفن دینا۔ دوکان داد نے دوسری جانب بیٹھے موٹے سے آدمی کو آوازلگائی پھر گویا ہوا

باجی لیڈیز چاہئے کہ جینٹس؟

جی جی لیڈیز کفن۔۔ہم نے تقریباً برا سا منہ بنا کر کہا

 ادھر آواز سننے کی دیر تھی کہ شبیر نامی بھائی تازہ تازہ دو خوبصورت کپڑے لےآیا۔

 کتنا ہوا بھیا۔۔۔۔ہم نے خوشی خوشی کپڑے ہاتھ میں پکڑتے ہوئے بولا

باجی بس 2500 دے دیں

 ڈھائی ہزاررررر۔۔۔۔۔۔یہ ہی تو ہماری پورے ماہ کی بچت ہے بھیا۔۔۔۔۔ہم نے بمشکل چیخ کو منہ سے نکلنے سے روکا پھر کچھ دیر اپنے ایکسپیکٹڈ کفن پر پیار سے ہاتھ پھیرا اور پیچھے ہٹتے ہٹے بولے۔

اماں رہنے دو بھیا ۔۔۔امیر ہو کر موت کو یاد کریں گے۔۔۔۔یہ بڑبڑاتے ہم الٹے پائوں دوڑتے دوڑتے گھرکو لوٹ آئے۔لو دسو کوئی حال اے ولا۔۔۔کفن بھی غریب کہ پہنچ سے باہر ہو گیا۔۔۔۔۔۔

A real incident happened with me today, just three hours ago 🙂

Advertisements

3 thoughts on “:) غریبی میں آٹا گیلا

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s